قاعدہ وناظرہ قرآن کریم

        بچوں کی ابتدائی دینی تعلیم میں ناظرہ قرآن کریم کی ضرورت واہمیت کسی سے مخفی نہیں، کسی بھی مکتب یا مدرسہ میں بچوں کودی جانے والی اولین تعلیم ناظرہ قرآن کریم ہی کی ہوتی ہے ۔جس سے بچے کوقرآ ن کریم کی حرف شناسی اورپھر دیکھ کر صحیح طریقے سے باتجوید قرآن کریم پڑھنا آجاتاہے ،صحیح طریقے پرنماز کی ادائیگی کے لئے یہ تعلیم بنیادی حیثیت رکھتی ہے ۔یہی وجہ ہے کہ ناظرہ قرآن کریم کی تعلیم سے کوئی بھی مسلمان، چاہے وہ عمرکے کسی بھی حصے میں ہو اورکسی بھی شعبے سے تعلق رکھتاہو،بے نیازنہیں ہوسکتا ،اسی لئے ملک کے طول وعرض میں پھیلے ہوئے تمام دینی مدارس میں ناظرہ قرآن کریم کو بنیادی حیثیت حاصل ہے ۔چنانچہ کوئی مدرسہ یا جامعہ اس شعبہ سے خالی نہیں بلکہ مکاتب ا ورچھوٹے مدارس میں بڑے دینی جامعات کے مقابلے میں اس کااہتمام کئی گنازیادہ ہے ۔

   معہد کی انتظامیہ نے بھی جب دینی ادارے کی داغ بیل ڈالنے کا ارادہ کیا تو اس کی ابتدا شعبۂ ناظرہ قرآن کریم سے کی، یہ شعبہ یوں تو ایک استاذ سے شروع ہوااورابتدا میں صرف ایک ہی درجہ تھا،تاہم جلدہی اس میں طلبہ کی اس قدر آمد ہوئی کہ کئی اساتذہ صرف قاعدہ وناظرہ کے واسطے مختص کرنے پڑے،اس وقت بھی اس شعبہ میں مستقل محنت جاری ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے